Hyderabad,

PRO Office Image

مانو کوڈنگ کلب کے تحت کوڈ فرم ہوم ہیکاتھن کا اہتمام

حیدرآباد، 25 فروری (پریس نوٹ) شعبہ کمپیوٹر سائنس اینڈ انفارمیشن ٹکنالوجی ، مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کے مانو کوڈنگ کلب (MCC) نے 21 فروری 2021 کو پروفیسر عبدالواحد‘ ڈین ، اسکول آف ٹکنالوجی کی رہنمائی میں ہیکررینک پلیٹ فارم پر ایک آن لائن ہیکاتھن کا انعقاد کیا جس میں بی ٹیک ، ایم ٹیک اور ایم سی اے کے 120 طلبہ نے حصہ لیا اور50 طلبہ نے چیلنجوں کو بخوبی حل کیا۔
ڈاکٹر سید امتیاز حسن، صدر شعبہ کے مطابق بی ٹیک سال دوم سے غلام مصطفی ‘محمد شفیع ، محمد یزدان رضوان جبکہ بی ٹیک سال چہارم سے عبد الکفیل خان اور داؤد ابراہیم بٹ پانچ بہترین اسکور پانے والے انعام یافتگان میں شامل ہیں۔یہ ہیکاتھن 4 گھنٹے کی مدت میں حل کرنے والے 2 آسان ، 2 درمیانی اور 2 مشکل مسائل پر مبنی تھا۔ ہیکاتھن کا مقصدطلبہ کو آئی ٹی انڈسٹری میں ملازمت حاصل کرنے کے لیے تیار کرنا ہے۔ ہیکاتھنس کوڈنگ مقابلہ جات ہیں جو محدود وقت میں مسائل کو حل کرنے طلبہ کی مہارت کو ابھارتے ہیں۔ مانو کوڈنگ کلب نے کوڈ کے ذریعہ ہوم ہیکاتھن 1.O کی منصوبہ بندی کی تھی اور اسے مشہور پلیٹ فارم ہیکررینک سے روبہ عمل لایاگیا۔ایم سی سی کی کور ٹیم میں عبدالباسط ، ناہید چودہری ، محمد انس ، محمد غازی رضا ، محمد مصطفی کمال ، رضوان احمد ، رابعہ خاتون ، عمار جمال اور اسد احمد شامل ہیں۔

انسان کا وجود کمالات کا مخزن ہے: پروفیسر فہیم اختر

مانو، شعبہ اسلامک اسٹڈیز میں ثقافتی پروگرام جوہر شناسی کا انعقاد
حیدرآباد، 25 فروری (پریس نوٹ) ”انسان بہت سے کمالات اور خوبیوں کا خزانہ ہے، کیونکہ اللہ نے اسے احسن تقویم پر پیدا فرما کر اشرف المخلوقات کے منصب پر فائز کیا ہے۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم اپنی خوبیوں کو تلاش کر کے انھیں پہچانیں اور ایسا ماحول بنائیں جس میں انھیں نکھارنے کا موقع ملے“۔ ان خیالات کا اظہار پروفیسر محمد فہیم اختر،صدر شعبہ اسلامک اسٹڈیز نے بزم طلبہ، شعبہ اسلامک اسٹڈیز، مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کی جانب سے منعقدہ پروگرام ”جوہر شناسی“ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے اپنے صدارتی خطاب میں طلبہ کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ ”آج کا پروگرام مفید تھا، امید ہے کہ آئندہ بھی اس طرح کے پروگرام کا انعقاد کیا جاتا رہے گا، تاکہ طلبہ کے اندر پوشیدہ صلاحیتوں کو تلاش کر کے ان کو نکھارا جا سکے۔
واضح رہے کہ اسی ماہ نئے تعلیمی سال کے لئے بزم طلبہ کے مشیر ڈاکٹر شکیل احمد ،اسسٹنٹ پروفیسر شعبہ کی نگرانی میں بزم کے ذمہ داران کا انتخاب بھی عمل میں آیا تھا، تاکہ طلبہ منظم طور پر شعبہ میں تعلیم کے ساتھ تہذیبی وثقافتی پروگرام کرتے رہیں۔ جوہر شناسی کے نام سے بزم طلبہ کے اس پروگرام میں ایم اے سال اول ودوم کے تمام طلبہ نے نہایت شوق اور دلچسپی سے حصہ لیا اور مختلف النوع پروگرام غزل، نعت، منتخب اشعار، اقوال زرین، افسانے اور مختصر کہانیاں وغیرہ پیش کیں، جنہیں شعبہ کے تمام اساتذہ اور طلبہ نے پسند کیا اور طلبہ کے اصرار پر شعبہ کے دو اساتذہ محترمہ ذیشان سارہ اور ڈاکٹر عاطف عمران نے بھی بہت ہی عمدہ انداز میں استاد شعراءکے کلام سے محظوظ کیا۔پروگرام کا آغاز عاشق الرحمن (ایم اے، سال اول) کی تلاوت کلام پاک سے ہوا اور نظامت کے فرائض ثناءاللہ رامپوری (ایم اے، سال دوم) نے ادا کئے۔ ایم اے، سال اول کے طالب علم عصمت اللہ وصی کے اظہار تشکر پر پروگرام کا اختتام ہوا۔ اس آن لائن پروگرام کے انعقاد کا نظم ایم اے، سال دوم کی طالبہ انعم محمدی شیخ نے انجام دیا۔